فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے مطالبات کی فہرست پاکستان کو دے دی

بزنس
5 دن پہلے
Image

زیورات خریدنے والوں کا ڈیٹا اکٹھا کیا جائے، فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے مطالبات کی فہرست پاکستان کو دے دی۔ فوٹو: فائلاسلام آباد: دہشت گردوں کی مالی معاونت اور منی لانڈرنگ کی روک تھام کے عالمی ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس ( ایف اے ٹی ایف) نے مطالبات کی فہرست پاکستان کو دے دی۔ایف اے ٹی ایف کی جانب سے ملک کے تمام صرافہ بازاروں کو دستاویزی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے جب کہ فہرست عمل درآمد کے لئے متعلقہ اداروں کو بھیج دی گئی ہے۔ایف اے ٹی ایف نے ہدایت کی ہے کہ زیورات خریدنے والوں کا ڈیٹا اکٹھا کیا جائے تاکہ کالعدم تنظیمو ں تک سونے اور زیورات کے عطیات نہ پہنچ پائیں۔ایف اے ٹی ایف نے اپنے مطالبات کی فہرست میں کہا ہے کہ ضلعی سطح پر رجسٹرڈ ٹرسٹ کا ڈیٹا اکھٹا کیا جائے، ضلعی سطح پر ریگولیشن کا نظام فوری طور پر بنایا جائے اور ٹرسٹ کے اکاؤنٹس کی تفصیلات اکٹھی کی جائیں۔یاد رہے کہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس ایک بین الحکومتی ادارہ ہے جس کا قیام 1989 میں عمل میں آیا اور اس تنظیم کے 35 ارکان ہیں جن میں امریکا، برطانیہ، چین اور انڈیا بھی شامل ہیں تاہم پاکستان اس تنظیم کا رکن نہیں ہے۔اس ادارے کی ویب سائٹ کے مطابق یہ ایک 'پالیسی ساز ادارہ' ہے جو سیاسی عزم پیدا کرنے کے لیے کام کرتا ہے اور اس کے ارکان کا اجلاس ہر تین برس بعد ہوتا ہے جس میں یہ دیکھا جاتا ہے کہ اس کی جاری کردہ سفارشات پر کس حد تک عمل درآمد ہو رہا ہے۔